!!!چین کی مصنوعات پراضافی ٹیرف عائد کرنے کا معاملہ

امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کی جانب سے چینی اشیاء ہر اضافی ٹیرف لگانے پر چین آگ بگولہ ہوگیااور امریکی ٖفیصلے کو’یکطرفہ اور بدمعاشی‘ قرار دےدیا،،،چین کی وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ امریکا نے ٹیرف میں اضافہ کرکےکثیرالجہتی تجارتی نظام اور عالمی تجارتی آرڈر کو نقصان‘ پہنچایا ہے، لہٰذا ’امریکا کو اپنے حصے کا تُرش پھل کھانا پڑے گا‘۔چین کی وزارت تجارت کےترجمان کا کہنا ہے کہ ’چین، امریکا پر زور دیتا ہے کہ وہ صورتحال کے بارے میں غلط اندازہ نہ لگائے اور چین کے لوگوں کے عزم کو کم نہ سمجھے‘۔انہوں نے امریکا کوخبردار کیا کہ ’ اپنی احمقانہ غلطی کو روکے، بصورت دیگر نتائج کی مکمل ذمہ داری واشنگٹن پر عائد ہوگی‘۔
عالمی تجارتی ماہرین کا کہنا ہے کہ رواں برس کے اواخر میں دونوں ممالک کے مابین تجارتی محاذ کی وجہ سے تمام درآمدات اور برآمدات کو متاثر ہوں گی۔جبکہ امریکا کی بیشتر کمپنیاں چین کی خدمات پرانحصار کرتی ہیں۔دوسری جانب یورپی رہنماؤں نے بھی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو چین اور یورپ کے ساتھ تجارتی محاذ آرائی سے خبردار کردیا۔ان کا کہنا تھا کہ تجارتی کشیدگی کے نتیجے میں پوری دنیا کی اقتصادی صورتحال متاثر ہوگی اور بے روزگاری بڑھے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.