مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کی پھرخون کی ہولی

مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کی ریاستی دہشتگردی کا تازہ واقعہ،، سرینگر کے قریب نوگام میں قابض بھارتی فوجیوں نے سرچ آپریشن کی آڑ میں 2 کشمیریوں کوفائرنگ کرکے شہید کر دیا، گزشتہ روز بھی سرچ آپریش کابہانہ بناکر 4 کشمیری نوجوانوں کو شہیدکردیاگیاتھا۔حالیہ شہادتوں پرمقامی لوگ مشتعل ہوگئےاورانہوں نےسڑکوں پرنکل کربھارتی فوج کیخلاف مظاہرہ کیا۔
دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بربریت سے امریکی میڈیا بھی نظریں نہ چرا سکا، معتبر امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ سچ سامنے لے آیا۔امریکی اخبارکی رپورٹ کےمطابق قابض بھارتی فوج کے بڑھتے مظالم نے کشمیر کے دانشوروں کو بھی مسلح جدوجہد پر مجبور کر دیاہے، ہتھیاراٹھانےوالے دانشوروں میں محمد رفیع بھٹ جیسے پی ایچ ڈی ہولڈر بھی شامل ہیں جواپنے طلبا کی ہر وقت کتاب سے مدد کرنے کے لیے تیار رہتے تھے،رفیع بھٹ گزشتہ سال لاپتہ ہوئے اور 2دن بعد انہیں جعلی آپریشن میں شہید کر دیا گیا، انجینئرنگ کے طالب علم عیسیٰ فضیلی کو بھی اسی طرح کے آپریشن میں شہید کیا گیا۔
اخبارنےلکھاکہ سال 2018 سے کشمیری نوجوانوں کی مسلح جدوجہد میں کئی گنا تیزی آ ئی۔ 2018 میں تحریک آزادی میں نوجوانوں کی شمولیت میں 52 فیصد اضافہ ہوا، گزشتہ سال 191 نوجوانوں نے تحریک آزادی میں شمولیت اختیار کی، پلوامہ واقعے میں مبینہ حملہ آورعادل احمد ڈار بھی انہی میں سے ایک تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.