کراچی میں عام آدمی کےبعدوزیربھی غیرمحفوظ

شہرقائدمیں ایک بارپھرجرائم پیشہ افرادسراٹھانےلگے،، گزری کےعلاقےمیں وفاقی وزیر اینٹی نارکوٹکس اور سابق وزیراعلیٰ سندھ علی محمد مہر کےگھر میں ڈاکوگھس آئے،مزاحمت پرڈاکوؤں نےپستول کےبٹ مارکر علی محمد مہر کوزخمی کردیا،جنہیں طبی امدادکیلئےڈیفنس کے نجی اسپتال میں منتقل کر دیا گیا جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔
آئی جی سندھ نے واقعے کی فوری رپورٹ طلب کر لی۔جی ڈی اے رہنما شہریار مہر نے میڈیا سے گفتگو میں کہاکہ علی محمد مہر سادہ انسان ہیں، انہوں نے اپنے لیے کوئی سیکیورٹی نہیں رکھی۔بظاہر واقعہ ڈکیتی کا لگتا ہے کیوںکہ گھر میں سامان پھیلا ہوا تھا۔
دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل شیخ واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے سندھ حکومت کوتنقیدنشانہ بناڈالا،ان کاکہناتھاکہ سندھ میں وفاقی وزیر بھی محفوظ نہیں رہے، امن امان کی خراب صورتحال پر وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کا منہ نہیں کھلتا،انہوں نےملزمان کی جلدگرفتاری کامطالبہ کیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.