سانحہ کرائسٹ چرچ،مقدمےکی دوسری سماعت

نیوزی لینڈ کی ہائیکورٹ میں سانحہ کرائسٹ چرچ کے حملہ آوربرینٹن ٹیرنٹ کے خلاف مقدمے کی دوسری سماعت ہوئی۔ دو مساجد پر دہشت گرد حملہ کرنے والے سفید فام انتہا پسند برینٹن ٹیرنٹ کی کرائسٹ چرچ کی عدالت میں وڈیو لنک کے ذریعے پیشی ہوئی ۔ مقدمے کی مختصر سماعت کے دوران جج نے کہا کہ دو ماہرین جائزہ لیں کہ ٹیرنٹ مقدمےکا سامنا کرنے کے قابل ہے یا دماغی طور پر ٹھیک نہیں ہے۔ اس موقع پر شہداء کے لواحقین کی بڑی تعداد کمرہ عدالت میں موجود رہی ۔
سفید فام انتہا پسند دہشتگرد برینٹن ٹیرنٹ نے 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کےشہر کرائسٹ چرچ کی 2 مساجد پر خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ کردی جس سے 50 نمازی شہید اور متعدد زخمی ہوگئے تھے جس پر دہشت گرد کو قتل اور اقدام قتل سمیت مجموعی طور پر نواسی الزامات کا سامنا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.