پٹیالہ گھرانے کے سپوت اسد امانت علی کی برسی

اسد امانت علی 25 ستمبر 1955 کو لاہور میں پیدا ہوئے۔پٹیالہ گھرانے سے تعلق رکھنے والے معروف گائیک نے چھوٹی عمر میں ہی خاندانی روایت کو آگے بڑھایا، انہیں موسیقی کا فن والد امانت علی خان سے ورثے میں ملا مگرانہوں نے اپنی علیحدہ شناخت بنائی ۔ والد کی گائی غزل “انشا جی اٹھو اب کوچ کرو” سے اسد امانت علی کو اولین شناخت ملی۔
دس برس کی عمر سے موسیقی کی دنیا میں قدم رکھنے والے اس فنکار کی آواز نے لوگوں کے دلوں پر راج کیا، انہوں نے 1970 میں اپنے والد استاد امانت علی خان کی وفات کے بعد باقاعدہ گلوکاری شروع کی اور والد کے مشہور گیت اور غزلیں گاکر شہرت حاصل کی لیکن انہیں اصل شہرت ‘عمراں لنگھیاں پباں پار‘ سے ملی، اس کے علاوہ” گھر واپس کب آؤ گے” ان کی شاہکار غزلیں ہیں،انہوں نے بے شمار پاکستانی فلموں کے لیے گیت گائے
اسد امانت علی کو پرائڈ آف پرفارمنس سے بھی نوازا گیا۔مداح اسد امانت کو انکے چچا حامد علی خان کے ساتھ بہت پسند کیا کرتے تھے،اسد امانت 52 برس کی عمر میں جہان فانی سے کوچ کر گئے لیکن ان کی آواز آج بھی زندہ ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.