توانائی کے حوالے سے عالمی بینک کی رپورٹ جاری

عالمی بینک کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ کے مطابق توانائی سے متعلق مسائل کے مجوزہ حل کےلیے حکام کو اچھی طرح کام کرنے والے پاور پلانٹس کو ترجیحی بنیادوں پر گیس کی فراہمی اور قیمتوں کا نیا میکانزم ترتیب دینے کی تجویز دی گئی ہے تا کہ ان کی کارکردگی میں اضافہ ہو۔ اس حوالے سے عالمی بینک کے ایک عہدیدار کا کہنا ہے کہ پاکستان کے شعبہ توانائی میں نقائص کے سبب صرف سال 2015 میں ملکی معیشت کو 18 ارب روپے کا نقصان اٹھانا پڑا جو مجموعی ملکی پیداوار کا 6.5 فیصد تھا۔ رپورٹ پیش کرنے والے عالمی بینک کے سینیئر ماہر اقتصادیات ’فین زینگ کا کہنا تھا کہ لاگت پہلے کے مالی اخراجات کے تخمینوں سے کہیں زیادہ ہے اور اس سلسلے میں اصلاحات سے پاکستانی معیشت کو کاروبار کی مد میں ہونے والا 8 ارب 40 کروڑ ڈالر کا نقصان ختم کیا جاسکتا ہے اور مقامی آمدنی میں 4 ارب 50 کروڑ ڈالر کا اضافہ کیا جاسکتا ہے۔

عالمی بینک پاکستان کے ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ پاکستان شعبہ توانائی میں موجود نقائص کو دور کر کے معاشی نمو اور نوکریوں کے مواقعوں میں اضافہ کرسکتا ہے اور اس کے لیے بجلی ضائع ہونے سے بچانے، صاف توانائی پر منتقل ہونے اور نجی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.