امریکا کی جنگ کے خاتمے کیلئے شام پر مزید سخت پابندیاں

0
غیرملکی خبر ایجنسیوں کی رپورٹس کے مطابق امریکا کی جانب سے عائد تازہ پابندیوں میں 39 کمپنیاں، بشارالاسد اور ان کی اہلیہ اسما سمیت کئی افراد کونشانہ بنایا گیا ہے۔امریکا کے سیکریٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو نے بشارالاسد اور ان کی اہلیہ کو جنگ سے نفع کمانے والا خاندان قرار دے دیا۔
رپورٹ کے مطابق نئی سفری اورمالی پابندیوں سے بشارالاسد کو ایک ایسے وقت میں واسطہ پڑے گا جب انہیں دہائیوں سے جاری خانہ جنگی اور احتجاج کے باعث بدترین معاشی بحران کا سامنا ہے۔مائیک پومپیو نے ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے شام پر پابندیوں سے متعلق دستخط شدہ قانون کے مطابق نئی پابندیوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ نئی پابندیاں بشارالاسد پر معاشی اور سیاسی دباؤ بڑھانے کی شروعات ہیں جبکہ مزید اقدامات کیے جائیں گے۔امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ نے کہا کہ ‘ہم مزید پابندیاں لگائیں گے اور ہم اس وقت تک نہیں رکیں گے جب تک بشارالاسد اور اس کی حکومت شام کے عوام کے خلاف اپنی غیر ضروری اور بدترین جنگ ختم نہیں کرتے اور حکومت تنازع کے سیاسی حل کے لیے تیار نہیں ہوتی’۔
شام کی حکومت کو پہلے ہی امریکا اور یورپی یونین کی پابندیوں کا سامنا ہے جس کے تحت ریاست، سیکڑوں کمپنیوں اور شہریوں کے اثاثے منجمد ہیں۔واشنگٹن اپنے شہریوں پر شام کو برآمدات اور سرمایہ کاری پر پابندی لگا چکا ہے،اسی طرح تیل اور ہائیڈروکاربن سے متعلق مصنوعات کی ترسیل بھی منجمد ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: