وینزویلا بحران پر امریکا اور روس آمنے سامنے

وینزویلا میں سیاسی بحران شدت اختیار کر گیا.امریکی حمایت یافتہ اپوزیشن لیڈر جوان گوائیڈو نے صدر نکولس مادورو کا تختہ الٹنے کے لیے صدراتی محل کی جانب پیش قدمی کی ۔ مظاہرین کو روکنے کیلئے سرکاری مشینری استعمال کی گئی اور پولیس کے ساتھ جھڑپوں میں انہتر افراد زخمی ہوگئے جس سے تحریک میں مزید شدت آگئی اور ملک میں خانہ جنگی کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔
ادھر امریکا کی وینزویلا کے سیاسی حالات اور بحران پر پر گہری نظر ہے اوراس ضمن میں امریکی سیکرٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو نے وینزویلا میں فوجی کارروائی کاعندیہ دیا ہے. مائیک پومپیو نے وینزویلا کی صورت حال پر روس اور کیوبا کی مداخلت کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس حوالے سے فوجی کارروائی ممکن ہے۔
دوسری جانب وینزویلا میں سیاسی بحران کے پیش نظر امریکا کی جانب سے فوجی کارروائی کا عندیہ دینے پر روس نے بھی خبردار کردیا۔ روسی وزیرخارجہ سرگئی لاروف کا امریکی ہم منصب سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا اس دوران انہوں نے امریکا کو فوجی کارروائی سے باز رہنے پر زور دیا۔ روسی وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ وینزویلا میں کسی بھی طرح کے مزید جارحانہ اقدامات کے انتہائی سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.