تعلقات کشیدہ ہونے کے باوجود امریکا نے 100 سفارتکاروں کو دوبارہ چین بھیج دیا

0
برطانوی خبر رساں ادارے ز کے مطابق واشنگٹن ڈی سی کے قریب واقع ڈیلس ایئر پورٹ سے خصوصی چارٹر طیارہ سفارتی عملے اور ان کے اہلِ خانہ کو لے کر جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول کے لیے روانہ ہوا جہاں سے اُنہیں طبی سہولیات سے آراستہ طیارے کے ذریعے چین کے شہر گوانگزو بھیجا گیا۔ہ امریکا نے فروری میں کرونا کی وبا کے باعث چین کے مختلف شہروں میں تعینات اپنے 1200 کے لگ بھگ سفارتی عملے کو واپس بلا لیا تھا۔رپورٹس کے مطابق امریکا چین کے ساتھ ناکام تجارتی مذاکرات اور ہانگ کانگ سے متعلق اس کی متنازع قانون سازی کے باوجود اپنا تمام سفارتی عملہ چین میں تعینات کرنا چاہتا ہے۔امریکی حکام کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں مزید خصوصی پروازوں کے ذریعے باقی ماندہ سفارتی عملے کو بھی چین روانہ کیا جائے گا۔ چند روز میں مزید پروازیں امریکی سفارتی اہلکاروں کو لے کر چین کے دارالحکومت بیجنگ، شنگھائی اور گوانگ زو جائیں گی۔خبر رساں ادارے کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے چین کو کرونا وائرس کا ذمہ دار ٹھہرانے، دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تنازعات اور ہانگ کانگ سے متعلق چین کے حالیہ اقدامات کے باعث امریکا اور چین کے تعلقات کشیدہ ہوتے جا رہے ہیں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: