عراق میں امریکی فوجی اڈے پر حملے کا جواب

0
امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے ہمراہ وائٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سیکریٹری خزانہ سٹیون منچن نے ایران پر مزید اقتصادی پابندیوں کا اعلان کیا۔ سیکریٹری خزانہ نے بتایا کہ امریکی اڈے پر میزائل حملے کے جواب میں ایرانی لوہے اور اسٹیل کمپنیوں سمیت دیگر شعبے میں سخت پابندیاں لگا رہے ہیں، امریکی وزیرخزانہ نے بتایا کہ ٹیکسٹائل، معدنیات، کان کنی اور دیگر سیکٹرز پر نئی پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔امریکی سیکریٹری خزانہ سٹیون منچن نے وائٹ ہاؤس میں بریفنگ میں صحافیوں کو بتایا 8 اعلیٰ عہدیداروں پر پابندی کے ساتھ ساتھ ایران میں کان کنی اور دھاتوں کی پیداوار کی 17 کمپنیوں پر بھی پابندی عائد کی گئی جن سے ایران کو اربوں ڈالر کی آمدنی ہوتی ہے۔سٹیون منچن نے کہا کہ ہم ایرانی حکومت کی اربوں ڈالر کی آمدن کو بند کر دیں گے اورایران کی معیشت کو متاثر کرنے والے اقدامات اس وقت تک جاری رہیں گے جب تک اس کی حکومت عالمی دہشت گردی کی مالی اعانت بند نہ کرے اور جوہری ہتھیاروں کے تلف کرنے کے عزم کا اظہار نہ کرے۔واشنگٹن کی جانب سے پابندی کی زد میں آنے والوں میں ایران کے اعلیٰ قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی، ایرانی مسلح افواج کے نائب چیف آف اسٹاف محمد رضا اشتیانی اور بسیج ملیشیا کے سربراہ غلام رضا سلیمانی سمیت دیگر اعلیٰ عہدیدار شامل ہیں ۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: