نیتن یاہو کے اشتعال انگیز بیانات، اقوام متحدہ نے خبردار کردیا

اقوام متحدہ نے اسرائیلی وزیراعظم کے انتخابی کامیابی کی صورت میں مغربی کنارے کو صہیونی ریاست میں ضم کرنے کے اعلان کو غیرقانونی قرار دے دیا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری انتونیو گوٹیرس نے کہا ہے کہ انہیں اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے اس منصوبہ سے متعلق جان کر دکھ ہوا ہے جس میں انہوں نے انتخابی کامیابی کی صورت میں مغربی کنارے کے کچھ علاقے صہیونی ریاست میں ضم کرنے کا اعلان کیا۔
انتونیو گوٹیرس کا کہنا تھا کہ ایسا اقدام غیر قانونی ہوگا جس سے علاقے میں امن کے امکانات ختم ہو جائیں گے، ان اقدامات کو عملی جامہ پہنانا دراصل بین الاقوامی قانون کی بہت بڑی خلاف ورزی ہوگا۔
خیال رہے کہ اسرائیلی وزیر اعظم نے منگل کے روز کہا تھا کہ مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقے وادی اردن کو 17 ستمبر کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے بعد اسرائیل میں ضم کردیں گے۔ نیتن یاہو کا ٹیلی ویژن خطاب میں کہنا تھا کہ ایک ہی جگہ ہے جہاں ہم انتخابات کے بعد ہی اسرائیلی خودمختاری کا اطلاق کرسکتے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.