پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر وزیر توانائی کی انوکھی منطق

0
وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بھارت سمیت برصغیرکے دیگر ممالک کے نسبت اب بھی سب سےکم ہیں۔وفاقی وزیر کاکہنا ہے کہ حکومت عوام کو ریلیف دینے پر یقین رکھتی ہے اور اسی لئے پٹرول کی قیمتوں میں اتنا اضافہ نہیں کیا گیا جتنا ہونا چاہئے تھا ۔عمر ایوب نے کہا کہ گزشتہ ماہ عالمی منڈی خام تیل کی قیمتوں میں خاطرخواہ اضافہ ہوا اور اس کےساتھ ساتھ پاکستانی روپے کی قدر میں بھی تین روپے کی کمی ہوئی۔وفاقی وزیر نے کہا کہ عالمی منڈی اور روپے کی قدر کے حساب سےپٹرول کی قیمت میں 31روپے58پیسے جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 24روپے31پیسےکا اضافہ ہونا چاہیے تھا مگر حکومت نےپٹرول کی قیمتمیں 25روپے58پیسےاورڈیزل کی قیمت میں 21روپے 31پیسےاضافہ کیا۔عمر ایوب کا کہنا ہے کہ اگر موازنہ کیا جائے تو ہمسایہ ملک بھارت سمیت برصغیر کے دیگر ممالک کے مقابلے میں پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں اب بھی کم ہیں۔
بھارت کے شہر دہلی میں پٹرول 80 روپے 13 پیسے،کولکتہ میں 81 روپے82 پیسے،چنئی میں 83 روپے 37 پیسے اور ممبئی میں 86 روپے 91 پیسے فی لٹر فروخت ہورہاہے،،،اسی طرح بنگلہ دیش میں پٹرول کی فی لٹر قیمت نواسی ٹکہ اور نیپال میں 85 روپے مقرر ہے جبکہ سری لنکا میں 104 سری لنکن روپے فی لٹر پٹرول دستیاب ہے

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: