مودی حکومت کی آشیرباد

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق آگرہ میں شیو سینا کے صدر وینو لاونیا نے دھمکی دی ہے کہ ہندو مذہب کے مقدس ماہ ’ساون‘ میں ہر پیر کو تاج محل میں آرتی کی رسم ادا کی جائے گی، وینو لاونیا نے تاریخ کو مسخ کرتے ہوئے کہا کہ تاج محل مقبرہ نہیں بلکہ ہندو دیوتا شیوا کا مندر تیجو مہالیا ہے ۔شیو سینا کے صدر کا کہنا تھا کہ وہ تاج محل میں پوجا کے لیے اپنے حواریوں کے ساتھ جائیں گے اور اگر پولیس روک سکتی ہے تو روک کر دکھائے ۔ بھارت کے محکمہ آثار قدیمہ نے ضلعی انتظامیہ کو ایک مراسلہ ارسال کیا جس میں کہا گیا کہ تاریخی عمارتوں میں کسی بھی قسم کی مذہبی رسومات کی ادائیگی ایکٹ 1958 کے خلاف ورزی ہے اور تاج محل میں کسی بھی نئی روایت کا آغاز بھی ایکٹ کے منافی تصورہوگاشیوسینا کی دھمکی اور محکمہ آثار قدیمہ کے مراسلے کے بعد ضلعی انتظامیہ متحرک ہوگئی ہے،انتظامیہ نے تاج محل کے باہرتعینات سیکیورٹی میں اضافہ کردیاہے۔حکام نے کہا ہے کہ شہر میں امن و امان کی صورتحال خراب کرنے کی کسی کو بھی اجازت نہیں دی جا سکتی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.