سوڈان:انتقال اقتدارکےمعاملےپرشروع ہونےوالےکشیدگی ختم

سوڈان میں فوج کی جانب سے اقتدار سول حکومت کو منتقل نہ کرنے کیخلاف احتجاج کرنے والوں نے فوج سے مذاکرات پر رضامندی ظاہرکردی، جس کےبعد احتجاج ختم کرنے کا اعلان کردیاگیا۔ مظاہرین اور فوج کے درمیان ثالثی مشن کے نمائندہ خصوصی کا کہنا تھا کہ آزادی اور تبدیلی اتحاد نے سول نافرمانی مہم کے خاتمے پر رضامندی کا اظہار کیا ہے۔نمائندہ خصوصی کا کہنا تھا کہ اقتدار عوامی حکومت کے حوالے کرنے کیلئےفریقین مذاکرات جلد بحال کرنےکےخواہاں ہیں،ادھر احتجاجی تحریک نے بھی عوام کو معمولات زندگی بحال کرنے کی کال دے دی جبکہ جانب سوڈان کی فوجی کونسل نے بھی جھڑپ کے دوران حراست میں لیے گئے سیاسی قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کیاہے۔خیال رہے کہ سوڈان کے دارالحکومت خرطوم میں مسلح افواج اور مظاہرین کی جھڑپوں میں 100 سے زائد ہلاکتوں کے بعد احتجاجی گروپ سوڈانی پروفیشنل ایسوسی ایشن نے سول نافرمانی کا اعلان کیا تھا۔11اپریل کو سوڈان کی فوج نے ملک میں جاری مظاہروں کے باعث 30 سال سے برسراقتدار صدر عمر البشیر کو برطرف کرکے گرفتار کرلیا تھا اور اقتدار بھی سنبھال لیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.