سری لنکا،چرچ حملوں کی تفتیش کا معاملہ

سری لنکا میں ایسٹر کے تہوار پر ہونے والے خود کش حملوں کی تفتیش کے لیے صدر میتھری پالا سری سینا اور پارلیمنٹ کے درمیان اختلافات کھل کر سامنے آگئے،،،دونوں اطراف سے ایک دوسرے پر تفتیشی عمل میں مداخلت کا الزام عائد کیا جانے لگا۔سری لنکا کی پارلیمنٹ کے سپیکر کارو جے سوریا نے صدر میتھری پالا سری سینا کو خبردار کیا کہ ایسٹر حملوں کی تفتیش کا راستہ روکنے سے اجتناب کریں بصورت دیگر پارلیمان اپنا آئینی اور قانونی حق محفوظ رکھتی ہے، صدر سری سینا پارلیمانی تفتیش کے ساتھ مکمل تعاون کریں۔اس سے قبل ملک کے متنازع صدر سری سینا نے سخت اور حتمی موقف اپنایا تھا کہ وہ چرچ حملوں کی تفتیش کے لیے بنائی گئی پارلیمانی کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہوں گے اور نہ ہی کسی دفاعی، فوجی یا پولیس افسر کو تفتیش کے لیے بھیجیں گے۔صدر میتھری پالا سری سینا نے اپنے موقف پر ڈٹے رہنے کے لیے اپنی کابینہ کا ہنگامی اجلاس بھی طلب کیا تھا جس میں ان کے بقول منہ زور پارلیمان کو لگام دینے کے لیے مشاورت کی گئی تھی۔ اورکابینہ نے صدر کو حمایت کا یقین دلایا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.