سری لنکا میں مسلم کش فسادات

سری لنکا کے بعض اضلاع میں مسلم کش فسادات پھوٹ پڑے، جس کے دوران مسلمانوں کی املاک کو نذر آتش کیا گیا اور مساجد کو بھی نقصان پہنچایا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق فسادات کے دوران مسلمان شہریوں کو جان بچانے کیلئے پولیس اسٹیشنز میں پناہ لینا پڑی۔
سری لنکن حکام نے فسادات پر قابو پانے کے لیے متاثرہ اضلاع میں کرفیو نافذ کردیا جبکہ سوشل میڈیا پر پابندی لگادی گئی۔پولیس نے فسادات میں ملوث درجنوں افراد کو حراست میں لے لیا تاہم زیر حراست افراد کی شناخت ظاہر نہیں کی جارہی ۔
سری لنکا میں گزشتہ ماہ ایسٹر کے موقع پر عیسائی عبادت گاہوں میں بم دھماکوں کے نتیجے میں دو سو اٹھاون افراد ہلاک جبکہ 500 سے زائد زخمی ہوگئے تھے ۔ دہشتگردی کے اس واردات کے بعد سری لنکا میں شدید کشیدگی پائی جاتی ہے اور مسلم مخالف قوتوں نے اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مسلمانوں کے خلاف کارروائیاں شروع کررکھی ہیں جس میں کمی کے بجائے اضافہ ہوتا جارہاہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.