آشیانہ اسکینڈل کیس ،شہباز شریف حاضرہو!!!

لاہور کی احتساب عدالت میں کیس کی سماعت شروع ہوئی تو احد چیمہ اور فواد حسن فواد عدالت کے روبرو پیش ہوئے تاہم شہباز شریف پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی میٹنگ میں ہونے کی وجہ سے پیش نہیں ہوئے۔ جج نے استفسار کیا شہباز شریف اجلاسوں کیلئے صحت مند ہیں، عدالت کیوں نہیں آ رہے؟ جس پرعدالت میں موجود شہباز شریف کے وکیل نے کہا شہباز شریف کے صحت کے مسائل ہیں۔
اس موقع پر عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پولیس تو صرف چوکیدار ہے، ریاست جواب دے کہ شہباز شریف کو کس نے اسلام آباد میں رہنے کی اجازت دی، انہیں میڈیکل کی اجازت اس لیے نہیں دی کہ وہ عدالت میں پیش ہی نہ ہوں۔ پراسیکیوٹر نیب کا اس موقع پر کہنا تھا کہ شہباز شریف کو پیش کرنا نیب کی ذمہ داری نہیں پولیس کی ہے جس پر عدالت نے کہا کہ پولیس کیا کرے وہ تو اپنا آپ بچاتی ہے۔
فاضل جج نے کہا کہ آج آشیانہ کیس میں فرد جرم عائد ہونا تھی جس پر شہباز شریف کے وکیل نے کہا عدالت کا آج فرد جرم عائد کرنے کا کوئی حکم نہیں تھا۔
عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا میں نیب حکام کو پابند کر رہا ہوں شہباز شریف بیمار ہیں تو انہیں ائیر ایمبولینس میں پیش کریں۔ احتساب عدالت نے شہباز شریف کو ایک ہفتے کے اندر حاضر ہونے کا کہا تو شہباز شریف کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ 16 تاریخ ان کے موکل کی ملاقاتوں کا دن ہے۔ عدالت نے شہباز شریف کے وکیل کی استدعا پر سماعت 18 فروری تک ملتوی کردی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.