سینیٹ نے وفاقی بجٹ کیلئے تجاویز منظور کر لیں

سینیٹ نے وفاقی بجٹ کے لیے تجاویز منظور کرتے ہوئے بطور سفارشات قومی اسمبلی کو بھجوا دیں ۔سینیٹ کی جانب سے گریڈ 16 تک ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد اضافہ، کم از کم ماہانہ اجرت 18 ہزار 600 روپے کرنے اور ڈالر کی قیمت 150 روپے پر منجمد کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔بجٹ تجاویز میں سالانہ 10 لاکھ روپے تک آمدن پر ٹیکس چھوٹ دینے، چینی کی قیمت میں اضافہ نہ کرنے اور سود کے خاتمے کی سفارشات بھی شامل ہیں۔سفارشات میں پری پیڈ موبائل فون صارفین پر ایڈوانس ٹیکس ختم کرنے صحت کے بجٹ پر کٹوتی نہ کرنےاورتعلیم کا بجٹ بڑھانے کاکہاگیاہے،سفارشات کے مطابق آرمی افسران کو تنخواہوں میں سالانہ اضافے سے محروم نہ کیا جائے، لائن آف کنٹرول ریلیف پیکیج میں کوئی کٹوتی نہ کی جائے۔ فاٹا اور پاٹا پر 17 فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی تجویز بھی واپس لینے کی سفارش کی گئی ہے۔سفارشات میں مزید کہا گیا کہ ہزار سی سی گاڑیوں پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی اور پانچ مرلہ اور 60 لاکھ روپے مالیت کی پراپرٹی پر ایڈوانس ٹیکس ختم کیاجاناچاہیے، سینیٹ نے تجویز کیا کہ ایف بی آر کی جانب سے عام شہریوں کا ڈیٹا ویب سائٹ پر نہ ڈالا جائے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.