شنگھائی تعاون تنظیم کے سیکرٹری جنرل بھی پاکستانی کاوشوں کے معترف نکلے

0
شنگھائی تعاون تنظیم کے سیکرٹری جنرل ولادی میرنوروف نے کہا ہے کہ تنظیم کی ترقی میں پاکستان کا تعاون مثالی ہے۔انسداد منشیات سے متعلقہ تجربہ رکھنے والا پاکستان اب ایس سی او ممالک کے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مشترکہ تربیت فراہم کررہا ہے۔ولادی میر نوروف نے سینٹر فار گلوبل اینڈ اسٹریٹیجک اسٹڈیز کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ سی جی ایس ایس شنگھائی تنظیم کے ممبر ممالک کے تحقیقی اور تجزیاتی اداروں کے مابین بات چیت کے لیے ایک اہم پلیٹ فارم ثابت ہوا ہے ۔شنگھائی تعاون تنظیم یورپ اور ایشیائی ملکوں پر مشتمل سیاسی، اقتصادی اور عسکری تعاون کی ایک تنظیم ہے جسے 2001 میں چین، قازقستان،کرغزستان،روس اور تاجکستان نے شنگھائی میں قائم کیا تھاپاکستان 2005 میں اس تنظیم کا مبصر بنا۔ بعد ازاں جولائی 2015 میں پاکستان اور بھارت کو شنگھائی تعاون تنظیم میں باقاعدہ ایک رکن کے طور پر شامل کر لیا گیا۔جس کے بعد اس گروپ کے ارکان کی تعداد 6 سے بڑھ کر 8 ہو گئی ہے

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: