عدالت نےدل کے غیرمعیاری سٹنٹس سے متعلق کیس نمٹا دیا

0

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے غیرمعیار سٹنٹس سے متعلق کیس کی سماعت کی،،،،سماعت کے دوران درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ سٹنٹ کی قیمتوں کامعاملہ طے نہیں ہورہا
چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ نسٹ کوکروڑوں روپے دیئے گئے،لوکل سٹنٹ کوٹیسٹنگ کیلئے جرمنی بھیجاگیا،جس کاآج تک کوئی نتیجہ نہیں آیا،چیف جسٹس نے کہا کہ سٹنٹ کی نئی اورپرانی جنریشن سب کرتب بازی ہے،ہم چاہتے ہیں غریب 60ہزارسے ایک لاکھ تک علاج کراسکے
چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ میں نے غریب آدمی کے لیے ادویات کا نسخہ لکھوایا تھا،نیشنل ہیلتھ ہسپتال میں چار چار لاکھ روپےکا سٹنٹ ڈالا جارہا ہے،کچھ کہاجائے توسٹنٹ ڈالنے بندکردیتےہیں،ڈاکٹرزہڑتال کرکے بیٹھ جاتے ہیں۔ درخواستگزار کے وکیل نے کہا کہ ہڑتال ینگ ڈاکٹرزکرتے ہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ ینگ ڈاکٹرزہماری فورس ہیں،جتناپریشان بڑوں نے کیا،ینگ ڈاکٹرزنے نہیں کیا،جب تک معاملہ حل نہیں ہوتاڈریپ کے سپردکردیتے ہیں۔
آرآئی سی کے سربراہ جنرل اظہرکیانی عدالت پیش ہو گئے۔ وکیل درخواستگزار نے کہا کہ ہیلتھ کیئرکمیشن کے بعدسٹنٹ کی قیمتوں کاتعین ہوسکتاہے،چیف جسٹس نے کہا کہ اس وضاحت کے بعد معاملے کونمٹارہے ہیں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: