سعودی عرب میں بڑی تبدیلی

سعودی عرب کی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ دو ہزار تیس سے سعودی عرب کی فوج میں خواتین کو بھی شامل کیا جائے گا اور یہ پہلی مرتبہ ہے کہ سعودی عرب میں خواتین فوجی لباس میں ملبوس نظر آئیں گی۔سعودی وزارت دفاع کے مطابق خواتین کو سپاہی، اسٹاف سارجنٹ، فرسٹ سارجنٹ، میجر اور دیگر عہدوں پر بھرتی کیا جائے گا۔ سعودی عرب کی افواج میں شامل ہونے کے لئے خواتین کو درخواستیں آن لائن جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔سعودی عرب میں اس سے قبل خواتین کو نہ گاڑی چلانے کی اجازت تھی نہ ہی بلا نقاب سڑکوں پرآنے کی اجازت تھی اس کے ساتھ ساتھ ہوٹلوں میں ٹھہرنے کے قوانین میں بڑی تبدیلی کردی ہے جس کے تحت غیر ملکی خاتون اور مرد کو ہوٹل کے ایک ہی کمرے میں ٹھہرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔یہ فیصلہ سعودی عرب میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے کیا گیا ہے۔ سعودی عرب کو سیاحوں کے لیئے پرکشش بنانے کے لیئے مختلف قوانین میں تبدیلی کی جارہی ہے۔ غیر ملکیوں کے علاوہ سعودی سمیت تمام غیر ملکی تنہا خواتین کو بھی ہوٹل میں کمرہ لینے کی بھی اجازت دی گئی ہے جبکہ سعودی عرب کے مقامی جوڑے اپنی خاندانی کوائف دکھا کر ہوٹل میں کمرہ لے سکیں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.