رواں برس حج منسوخ کرنے کا ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا

پاکستان میں تعینات سعودی عرب کے سفیرنواف بن سعید المالکی کا کہنا تھا کہ ‘سعودی عرب کی حکومت کی طرف سے رواں سال حج کو منسوخ کرنے کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیااوراگر حج کی منسوخی کا کوئی فیصلہ ہوا تو اس فیصلے سے عازمین حج کو بروقت ذمہ داری سے آگاہ کیا جائے گا۔سعودی عرب میں کرونا وائرس کے خلاف کیے گئے اقدامات سے بیروزگار ہونے والے پاکستانیوں کے حوالے سعودی سفیر نے کہا کہ وہ تمام لوگ جن کے پاس غیر منسوخ شدہ اقامے اور قانونی ایگزٹ موجود ہے وہ سب پروازیں بحال ہوتے ہی واپس سعودی عرب جا سکیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ سعودی شعبہ پاسپورٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ تمام لوگ جو پروازوں کی معطلی کی 72 گھنٹے کی ڈیڈ لائن کی وجہ سے سعودی عرب نہ پہنچ سکے تھے ان کے ایگزٹ اور ریٹرن ویزے کی معیاد خود بخود بڑھا دی جائے۔انہوں نے کہا کہ ’اسی طرح جو لوگ وزٹ ویزا یا عمرے کے لیے سعودی عرب گئے تھے مگر واپس اپنے ملک نہ پہنچ سکے ان پر ویزا کی تنسیخ پر کوئی جرمانہ نہیں ہو گا اور نہ ہی کوئی قانونی کارروائی ہوگی‘۔سعودی سفیر کا کہنا تھا کہ سعودی عرب میں آنے اور جانے والی پروازوں کی معطلی کا فیصلہ احتیاطی تدابیر کے طور پر سعودی شہریوں، وہاں رہنے والوں اور عمرہ زائرین کی حفاظت کے پیش نظر کیا گیا تھا۔سعودی حکومت نے 27 فروری کو کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک کے عوام کے لیے عمرہ اور سیاحت کو عارضی طور پر معطل کردیا تھا۔بعد ازاں 4 مارچ کو کورونا وائرس کے خدشات کے باعث عمرے کی ادائیگی عارضی طور پر معطل کردی گئی تھی۔جس کے بعد گزشتہ چند روز سے سوشل میڈیا پر سعودی حکومت کی جانب سے حج منسوخی کی خبریں گردش کر رہی ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: