مچل سٹارک برصغیر سے ہوتا تو”جورو کا غلام”کہلاتا

0
گزشتہ روز دفاعی چیمپئین آسٹریلیا اور بھارت کے درمیان ویمن ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کا فائنل کھیلا گیا جو کینگروز نے باآسانی جیت لیا ،،، اس میچ کو86 ہزار سے زائد شائقین نےمیلبورن گراؤنڈ میں دیکھا جو کہ ایک ریکارڈ ہے جبکہ میچ کی خاص بات بھارتی ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا اور آسٹریلوی فاسٹ باؤلر مچل اسٹارک کی شرکت بھی تھی ۔آسٹریلیا کے فاسٹ باؤلر مچل سٹارک اپنی اہلیہ الیسا ہیلی کی ویمن ورلڈکپ فائنل میں حوصلہ افزائی کے لیے جنوبی افریقہ کے خلاف اپنا میچ چھوڑ کر میلبورن پہنچے تھے جبکہ ہیلی نے اس میچ کو یادگار بناتے ہوئے 39گیندوں پر 5چھکوں اور 7چوکوں کی مدد سے 75رنز بنائے اور میچ کی بہترین کھلاڑی قرار پائیں۔آسٹریلوی باؤلر مچل سٹارک کی جانب سے اپنا میچ چھوڑ کر اہلیہ کا میچ دیکھنے میلبورن آنے پر معروف ٹینس سٹار اور پاکستانی کرکٹر شعیب ملک کی اہلیہ ثانیہ مرزا نے دلچسپ تبصرہ کیا ۔انہوں نے سوشل میڈیا پر اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ خدانخواستہ اگر مچل برصغیر سے تعلق رکھتے تو انہیں ایک سیکنڈ میں "جورو کا غلام” قرار دے دیا جاتا۔ انہوں نے آسٹریلوی کھلاڑی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ "مچل آپ نے بہترین کام کیا،کسی بھی شادی شدہ جوڑے کے لیے یہ ایک مثال ہے”۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: