افغان طالبان سےمذاکرات کی منسوخی کےنتائج سامنے آنے لگے

افغان دارالحکومت کابل میں امریکی سفارت خانے کے قریب راکٹ سے حملہ کیا گیا جو افغان وزارت دفاع کے دفتر کی دیوار پر گرا تاہم حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔
امریکی سفارت خانے کے قریب راکٹ حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب امریکا اور افغان طالبان کے درمیان 18 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کے لیے ہونے والی بات چیت مکمل طور پر ختم ہوچکی ہے۔خیال رہے کہ 8 ستمبر کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے طالبان کے ساتھ امن مذاکرات منسوخ کردیے تھے۔امریکی صدر نے اپنے پیغام میں کہا تھا کہ طالبان سےمذاکرات کابل حملےکے بعد منسوخ کیے گئے ہیں،،جس کے بعد افغان طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے امریکا کا ھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ جلد ہی امریکا کو اپنے اس فیصلے پر پچھتانا پڑے گا ،،،طالبان اپنی کارروائی تیز کر دیں‌ گے،

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.