کامیڈی کے بےتاج بادشاہ اداکار رنگیلا کی 80ویں سالگرہ

رنگیلا بیک وقت اداکار،گلوکار،ڈائریکٹر،پروڈیوسر،موسیقاراورمصنف تھے،قدرت نے انہیں ایسی شکل و صورت اور سراپے سے نوازا،جس کے انگ انگ سے مزاح کے شگوفے پھوٹتے تھے
رنگیلا کا نام محمد سعیدخان اور انکا تعلق صوبہ سرحد کے پسماندہ علاقے سے تھا،،، رنگیلا یکم جنوری انیس سو سینتیس کو افغانستان میں پیدا ہوئے،،، فنی کیریئر کا آغاز فلموں کے پوسٹراور فنکاروں کی تصویریں بنانے سے کیا ۔انہوں نے اس دور کے مقبول اداکارآزاد کی شاگردی اختیار کی جو ایک عرصے تک قائد اعظم محمد علی جناح ؒکے ڈرائیور بھی رہ چکےتھے
انیس سو ستاون میں رنگیلا نے فلمساز و ہدایتکار عطا اللہ شاہ ہاشمی کی اردو فلم “داتا”میں مختصر کردارسے فنی سفر کا آغاز کیا۔اداکارکی حیثیت سے خود کو منوانے کے بعد رنگیلا نے ہدایت کاری کے شعبے میں قدم رکھااور پہلی فلم “دیا اور طوفان” ڈائریکٹ کی
رنگیلا کی پروڈیوس کی گئی فلموں کو بہت پسند کیا گیا،رنگیلا کو دل اور دنیا”میری زندگی ہے نغمہ”،”رنگیلا”،اور “تین یکے تین چھکے”،جیسی کامیاب فلموں کے لیےبہترین رائٹر،بہترین کامیڈین،بہترین مصنف اور بہترین ڈائریکٹر کےاعلیٰ اعزازات سے نوازا گیا،،،کئی سال تک لوگوں کے چہروں پر مسکراہٹیں بکھیرنے والا ہر دلعزیز فنکار رنگیلا 24 مئی 2005ء کو اپنے چاہنے والوں کو ہمیشہ کیلئےسوگوارکرگیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.