ایک بار پھر پنجاب پولیس کا نجی ٹارچر سیل برآمد

پھر ایک کمزور پر تشدد کامعاملہ ،،،،وہاڑی کے تھانہ لڈن میں پولیس نے چوری کے الزام میں ظہوراں بی بی نامی خاتون کو نجی ٹارچر سیل میں رکھ کر تشدد کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں زخمی حالت میں گھر کے باہر پھینک گئے تھے.
مذکورہ خاتون کو اس نجی ٹارچر سیل میں صرف مار پیٹ اور شدید تشدد کا نشانہ ہی نہیں بنایا گیا بلکہ بجلی کے تاروں سے جھٹکے بھی دیئے گئے۔ خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ اہلکاروں نے اسے برہنہ کرکے بھی تشدد کیا۔ متاثرہ عورت کو تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا۔اطلاع ملنے پر وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار نے واقعے کاسختی سے نوٹس لیا اور آر پی او ملتان سے اڑتالیس گھنٹے میں رپورٹ طلب کرلی۔ انہوں نے ذمہ دار اہلکاروں کے خلاف محکمانہ اور قانونی کارروائی کا حکم بھی دیا۔۔ عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ پنجاب پولیس کو اپنا قبلہ درست کرنا پڑے گا۔پولیس حکام نے انچارج سی آئی اے امجد خان، سب انسپکٹر طاہر چوہان، اے ایس آئی حاجی یونس اور ایک پولیس اہلکار کو معطل کردیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.