6 کروڑ افراد کے”شدید غربت”کا شکار ہونے کا خطرہ،ورلڈ بینک

0

دنیا بھرمیں کرونا وائرس نے جہاں قیمتی جانیں نگلیں وہیں قومی و عالمی سطح پر بڑے معاشی بحران نے بھی جنم لے لیا ہے۔ اس وقت دنیا بھرمیں لاکھوں افراد اپنی ملازمتوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔
عالمی بینک کے صدر نےاپنےایک بیان میں کہاہے کہ کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے دنیا بھر میں چھ کروڑ افراد ’شدید غربت‘ کا شکار ہو سکتے ہیں۔ عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ میلپاس نے کہا کہ کرونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں دنیا بھر میں معاشی سرگرمیاں شدید متاثر ہوئی ہیں اور خدشہ ہے کہ اس سال کے اختتام تک عالمی معیشت کے حجم میں پانچ فیصد تک کمی آ سکتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کے مختلف ممالک میں پہلے ہی بے روزگاری میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور لاکھوں افراد کی نوکریاں ختم ہو گئی ہیں اور غریب ممالک کو خاص طور پر مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔
ڈیوڈ میلپاس کا کہنا تھا کہ عالمی بینک نے غریب ممالک کو اس بحران میں مدد کے لیے 160 ارب ڈالر کی گرانٹس اور کم شرح سود پر قرضوں کی پیشکش کی ہے، جبکہ دنیا کی 70 فیصد آبادی والے 100 ممالک کو پہلے ہی ایمرجنسی فنانس کی منظوری دی جاچکی ہے۔
انہوں نے کہا کہ چونکہ عالمی بینک ایک حد تک وسائل مہیا کر سکتا ہے اس لیے یہ ناکافی ہیں، جبکہ غریب ممالک کو قرضے دینے کے حوالے سے تجارتی قرض دہندگان کے کردار کو دیکھ کر انہیں بھی مایوسی ہوئی۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: