وزیراعظم کا نئے سال کا پہلا سرکاری دورہ

وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ ایک اعلیٰ سطحی وفد بھی ترکی جائے گا،جس میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر منصوبہ بندی خسرو بختیار اور مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد بھی شامل ہوں گے۔دورے کے دوران وزیراعظم عمران خان ترک صدررجب طیب اردگان سے ملاقات کریں گےجس میں دونوں ممالک کےدوطرفہ تعلقات کےتمام پہلوؤں کے علاوہ علاقائی و بین الاقوامی صورتحال پرتبادلہ خیال کیاجائے گا۔ وزیر اعظم عمران خان ترکی میں بزنس فورم سے بھی خطاب کریں گے۔اس کےعلاوہ ترک کاروباری شخصیات اورسرمایہ کاروں سےملاقاتیں بھی کرینگے۔

وزیراعظم عمران خان اپنے دورہ ترکی کے دوران ترک صدرطیب اردگان سے ملاقات کریں گے جس میں افغان مفاہمتی عمل سمیت خطے کے بدلتے حالات پر تبادلہ خیال کریں گے ۔ ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے باہمی تعاون اور تجارت سمیت اہم معاملات بھی زیرغور آئیں گے۔ وزیراعظم ترکی کے دیگر اعلیٰ حکام سے بھی ملاقاتیں طے ہیں، وزیر اعظم عمران خان جمعہ کی رات کو پاکستان واپس آئیں گے۔
گزشتہ ہفتےترک وزیر دفاع نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی اور ترک صدررجب طیب اردگان کا خصوصی پیغام پہنچایا۔ انھوں کا کہنا تھا کہ ترک قیادت وزیراعظم عمران خان کے دورہ ترکی کی منتظر ہے۔ ترک وزیر نے کہا کہ دونوں ملکوں میں تعلقات کی مضبوطی کو نئی سطح پر لے جائیں گے، انھوں نے ترکی کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف اور جذبہ کو سراہا.
افغان مفاہمتی عمل میں پاکستان بنیادی کردار ادا کر رہا ہے جس کے تناظر میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےچند روز قطر ، روس، چین ، ایران اور افغانستان کا دورہ کیا تھا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.