کشمیرمیں ہندوؤں کی آبادکاری کا منصوبہ ناقابل قبول

سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کاکہنا ہےکہ بھارت کا یہ اقدام ویسی ہی سازش ہے جیسی اسرائیل فلسطین کی سرزمین ہتھیانے اور اُس پر یہودی تسلط قائم کرنے کیلئے کررہا ہے۔ بھارت کے اس اقدام سے کوئی بھی شخص خطے کی زمین کو خرید سکےگا،،،مودی سرکار کشمیریوں سے ان کی سرزمین چھین کر وہاں ہندوؤں کو بسانے کا خواب دیکھ رہی ہے لیکن غیورپاکستانی قوم اور بہادر افواج کے ہوتے ہوئےبھارت کی یہ ناپاک کوشش کسی طور کامیاب نہیں ہوسکتی۔پرویز مشرف نے اپنے بیان میں کہا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں 80 ہزار بھارتی فوجیوں کی تعیناتی سے یوں لگتا ہے کہ بھارت کسی طویل مدتی منصوبہ سازی کا ارادہ رکھتا ہے،بھارتی حکومت کا یہ طرزعمل کشمیر کو مسلم اکثریت سے بدل کر ہندو اکثریت میں تبدیل کرنے کا مجرمانہ فعل ہے۔ حکومت پاکستان اور افواج پاکستان اس بات کی ہرگز اجازت نہیں دے گی۔ کور کمانڈرز کانفرنس اور وزیراعظم کے اسمبلی میں بیانات اس بات کا ثبوت ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.