پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس آج ہوگا

مشترکہ اہم اجلاس میں ملکی حالات، بھارتی اقدامات، کشمیر میں مظالم، خطے کے ممالک سے تعلقات صدر مملکت کے خطاب کا حصہ ہوں گے۔ پارلیمانی ذرائع کے مطابق صدرمملکت حکومت کے پہلے سال کی کارکردگی کا احاطہ کرنے کے ساتھ آئندہ سال کے اہداف کا عزم بھی ظاہر کریں گے، اجلاس میں شرکت کے اہم شخصیات کو خصوصی دعوت نامے بھی بھجوا دیئے گئے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں شرکت کے لئے چاروں صوبائی وزرائے اعلی، گورنرز کو مدعو کیا گیا ہے، تینوں مسلح افواج کے سربراہان سمیت چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کو بھی اجلاس میں شرکت کی دعوت دی گئی، صدر و وزیراعظم آزاد کشمیر، گورنر و وزیراعلی گلگت بلتستان کو بھی مدعو کیا گیا ہے۔تمام دوست ممالک میں پاکستان میں موجود سفراء کو بھی اجلاس میں مدعو کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں شرکت کے لئے صرف خصوصی دعوت ناموں کے حامل افراد اور خصوصی اسٹکرز والی گاڑیوں کو آنے کی اجازت ہوگی۔مشترکہ اجلاس کے موقع پر ریڈ زون میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے جائیں گے، مشترکہ اجلاس میں اپوزیشن کی جانب سے احتجاج کا بھی امکان ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ آصف زرداری، شاہد خاقان عباسی، سعد رفیق اور رانا ثناءاللہ سمیت زیر حراست ارکان کے پروڈکشن آرڈرز جاری نہ ہونے پر احتجاج کا امکان ہے، اسپیکر کی جانب سے اجلاس سے قبل تمام پارلیمانی جماعتوں کو اعتماد میں لیا جائے گا۔ اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف مشترکہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.