مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی صورتحال،پاکستان کا اقوام متحدہ کو خط

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریز کو خط وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےلکھا، جس میں انھیں مقبوضہ کشمیر کی تشویشناک صورتحال اور خطے میں امن وامان کے حوالے سے آگاہ کیا گیا ۔ خط کے متن میں کہا گیا کہ مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارت کالے قانون کے تحت نہتے کشمیریوں کو جبر وتشدد کا نشانہ بنا رہا ہے جبکہ بھارت کی طرف سے لائن آف کنٹرول پر فائرنگ اور گولہ باری میں اضافہ ہو گیا ہے جو 2003ء کے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی ہے،اگر اس صورتحال کا سدباب نہ کیا گیا تو امن وامان کو شدید خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔خط میں واضح کیا گیا کہ بھارت 35 اے اور آرٹیکل 370 کے خاتمے کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کے باسیوں کے حق ملکیت اور حق شہریت کو ختم کرنے کے درپے ہے لیکن پاکستان ایسی کسی جغرافیائی تبدیلی کا مخالف ہے، بھارت کی طرف سے یہ اقدامات سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔ خط میں مطالبہ کیا گیا انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کوتحقیقات کے لیے کمیشن آف انکوائری تشکیل دیاجائے جبکہ اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندہ برائے جموں و کشمیر کی تعیناتی بھی کی جائے۔اقوام متحدہ کےسیکرٹری جنرل نے مقبوضہ کشمیرمیں کشیدگی پرتشویش کا اظہار کیا ہے۔ سیکرٹری جنرل کے ترجمان سٹیفن ڈوجیرک نے کہا کہ اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیرمیں سخت پابندیوں سے آگاہ ہے۔مبصرگروپ نےایل اوسی پرفوجی سرگرمیوں میں اضافےکا مشاہدہ کرکے رپورٹ دی ہے۔ تنازع کے تمام فریقین سے اپیل ہے وہ تحمل کا مظاہرہ کریں، کشمیرسمیت تمام تصفیہ طلب مسائل بات چیت سےحل ہونےچاہئیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.