کرونا سے بے نیاز اور بے فکراپنی ہی دُھن میں مگن

0

ایک طرف دنیا کورونا وائرس سے نبرد آزما ہے تو دوسری جانب شمالی کوریا نے اپنے مشرقی ساحل پر کم رینج کے حامل دو بیلسٹک میزائلوں کا تجربہ کیا ہے۔جاپان کی وزارت دفاع کے مطابق یہ میزائل جاپان کے سمندر اور معاشی حب سے کچھ دور آکر گرے۔ادھرجنوبی کوریا کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف نے اپنے بیان میں کہا کہ شمالی کوریا نے ساحلی شہر وون سان سے جاپان کے سمندر میں دو بیلسٹک میزائل فائر کیے۔انہوں نےکہا کہ جہاں ایک جانب دنیا کورونا وائرس کے سبب مشکلات سے دوچار ہے تو ایسے موقع پر شمالی کوریا کی جانب سے اس طرح کی فوجی کارروائیاں انتہائی نامناسب ہیں۔شمالی کوریا کے انسٹیٹیوٹ فور فار ایسٹرن اسٹڈیز کے محقق کم ڈونگ یُب کے مطابق اس تجربے کا مقصد دنیا کو یہ پیغام دینا ہے کہ شمالی کوریا میں سب کچھ معمول کے مطابق ہے۔تاہم سرکاری طور پر میزائل تجربے کے حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا لیکن وہ اس ماہ تین میزائلوں کا تجربہ کر چکے ہیں۔گزشتہ ہفتے بھی سیئول کی جانب سے دو میزائل کے تجربات کیے گئے تھے جنہیں کم رینج کے حامل میزائل قرار دیا گیا تھا۔ان میزائل تجربات کے ایک دن بعد شمالی کوریا کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا تھا کہ ملک کے رہنما کم جونگ ان کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کال کر کے تعلقات کی بحالی کی پیشکش کی تھی اور اس بات کی وائٹ ہاؤس کی جانب سے تصدیق بھی کی گئی۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: