مقبوضہ کشمیرپربھارتی موقف کمزور پڑنےلگا

امریکی اخبار کا ایڈیٹوریل بورڈ بھی مسئلہ کشمیر کیلئےآوازاٹھانے والوں میں شامل ہوگیا،،، نیویارک ٹائمز کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کو اپنا اندرونی مسئلہ کہہ کر بھارت نے جو دیوار اٹھا رکھی تھی وہ کمزور ہو رہی ہے،بین الاقوامی سطح پرکشمیر کے معاملے پرنریندرمودی سرکار بتدریج کارنر ہورہی ہے۔ایڈیٹوریل بورڈ نےسیکیورٹی کونسل سےکہا ہےکہ نریندر مودی سمجھتا ہےکہ وہ کشمیر پرجابرانہ قبضےکواکیلےسنبھال لےگا،لیکن یہ اس کی خام خیالی ہے۔ بھارتی حکومت نے کشمیر کی نیم خود مختاری کالعدم قرار دے دی ہے اورمودی حکومت کا کشمیرمیں برابری کا دعویٰ انیتہائی بیہودہ ہے۔بورڈ نے سیکیورٹی کونسل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں جو کچھ ہوگا وہ سنبھالنا نریندر مودی کے بس کی بات نہیں ہے۔ایڈیٹوریل بورڈ نے اپنی تحریر میں امریکی دورے پر عمران خان سے ملاقات کا تذکرہ بھی کیا، جس میں پاکستانی وزیراعظم نے بورڈ سے استفسار کیا تھا کہ ’اگر اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر پر بات نہیں کرے گی تو کون کرے گا؟نیویارک ٹائمزنے اپنے تجزیے میں کہا کہ مودی کے ہوسٹن میں ٹرمپ کارڈ ضائع کھیلا، بھارت بڑی مارکیٹ ہے دنیا سے اس کا مفاد جڑا ہے، اس لئے سیکیورٹی کونسل کے ایجنڈے پر کشمیر نہیں رہا، لیکن اب وقت بدل رہا ہے۔امریکہ اور یورپ میں بھی کشمیر کا مسئلہ اجاگر ہو رہا ہے، بھارت کو حل کے لئے مذاکرات کی میز پر آنا ہی ہوگا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.