میانمارمیں فوج کی فائرنگ سے12سالہ بچےسمیت5روہنگیامسلمان جاں بحق

0
میانمار کی مغربی ریاست راکھائن کے مراک یو قصبے میں فوج کی فائرنگ اور گولہ باری کے نتیجے میں 12 سالہ بچے سمیت 5 مسلمان جاں بحق جبکہ 11 سے زائد زخمی ہوگئے۔میانمار کی رکن پارلیمنٹ تون تھر سین کا کہنا ہے کہ راکھائن میں بدھسٹ کے شر پسندوں پر مشتمل جنگجوؤں نے فوجی قافلے پر حملہ کیا جس کےجواب میں فوجیوں نے شورش زدہ علاقے کے دیہاتوں پر فائرنگ اور گولہ باری کی۔دوسری جانب میانمار کی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ عسکریت پسند گروہ شہریوں کی ہلاکت کے ذمہ دار ہیں۔ادھرعسکریت پسندوں کے ترجمان کھین نے فوجی دعوے کو مسترد کرتے ہوئے ہلاکتوں کا ذمہ دار ریاستی فوج کو ٹھہرایا دیا۔اس سے قبل میانمار میں دھماکے میں 4 روہنگیا بچے ہلاک ہوگئے تھے جس کے حوالے سے فوج اور باغیوں نے ایک دوسرے پر الزامات عائد کیے تھے۔جس سے بعد25 جنوری کو میانمار کے فوجیوں نے روہنگیا کے ایک گاؤں پر گولہ باری کی تھی جس میں ایک حاملہ خاتون سمیت دو خواتین ہلاک اور 7 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: