سلامتی کونسل میں توسیع سب کےمفاد میں ہونی چاہیے،ملیحہ لودھی

سلامتی کونسل میں توسیع پر بین الاقوامی مذاکرات میں پالیسی بیان دیتے ہوئے ملیحہ لودھی نے کہا کہ مستقل ارکان میں اضافہ طاقت،اثر و رسوخ اور استحقاق کو فروغ دے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان جمہوری اصولوں پر استوار سلامتی کونسل کا حامی ہے جو زیادہ شفاف، فعال اور عصر حاضر کے تقاضوں سے مطابقت رکھتی ہو۔
پاکستانی سفیر کا کہنا تھا ہمیں توقع ہے بات چیت کے اس دور میں چند ممالک کی انفرادی خواہشات کی بجائے دنیا بھر کے ممالک کی اجتماعی خوشحالی پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔ ملیحہ لودھی نے اصلاحاتی عمل کے لئے ایک واضح روڈ میپ دینے پر بھی زور دیا ۔
سلامتی کونسل کی توسیع کے حوالہ سے جامع مذاکرات فروری 2009ءمیں شروع ہوئے تھے جو چار اہم شعبوں پر محیط ہیں جن میں رکنیت کی کٹیگیریز ، ویٹو کا معاملہ، علاقائی نمائندگی، سلامتی کونسل میں توسیع کا حجم، کونسل کے کام کا طریقہ کار اور جنرل اسمبلی کے ساتھ اس کے تعلقات شامل ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.