حکومت کو ہٹانے کے معاملے پر ن لیگ تقسیم ہے،خواجہ آصف

ن لیگ کے سینئر رہنما خواجہ آصف نے کہاہے کہ ن لیگ میں ایک رائے یہ بھی ہے کہ حکومت کو ہٹانے کیلئے فوری طور پر تحریک چلائی جائے۔ ن لیگ میں اس موضوع پر مختلف آراء ہیں۔ میں شہباز شریف اورمریم نواز کی رائے کے درمیان کھڑا ہوں۔ نواز شریف سے میرا جذباتی لگاؤ ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ میری رائے نواز شریف کی رائے کے قریب ہوگی۔ خواجہ آصف کا مزید کہنا تھا کہ عرب ممالک میں نواز شریف کے ذاتی تعلقات آج بھی موجود ہیں۔ سعودی عرب، قطر اور متحدہ عرب امارات پاکستان کے خیرخواہ ہیں۔ پاکستان میں حکمران کوئی بھی ہویہ تعلقات اسی طرح رہیں گے۔ خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ یہ بات بھی درست ہے کہ عرب ممالک نوازشریف سے کچھ ناراض رہے ہیں۔بجٹ کے حوالے سے سابق وزیردفاع کا کہنا تھا کہ بجٹ میں ترامیم کی جاسکتی ہیں اس کیلئے بجٹ میں ایک دو دن تاخیر بھی ہوجائے تو کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ اگر ہماری تجاویز پر پیشرفت ہوتی ہے تو حکومت اور اپوزیشن میثاق معیشت بھی کرسکتی ہیں۔خواجہ آصف نے کہا کہ انکوائری کمیشن بنانا ہے تو 2002ء سے 30جون 2019ء تک قرضوں سے لے کر کولیشن سپورٹ فنڈ سمیت دیگر مدات میں باہر سے آنے والے پیسے کا حساب کتاب ہونا چاہئے۔ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے ساتھ مشرف حکومت اور پی ٹی آئی حکومت کا بھی حساب ہونا چاہئے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.