بھارت کی ریاستی دہشتگردی۔۔۔

جنت نظیر وادی کے ضلع پلوامہ کے علاقے اوانتی پورہ میں بھارتی فوج نے داخلی و خارجی راستوں کو بند کر کے نام نہاد سرچ آپریشن کیا جس کے دوران قابض فوج نے فائرنگ کر کے تین کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا۔محض ایک ہفتے کے دوران قابض بھارتی کی فائرنگ سے شہید ہونے والے کشمیری نوجوانوں کی تعداد 8 ہوگئی ہے،مقبوضہ کشمیر کے محاصرے کو175 دن مکمل ہوگئے، وادی میں تاحال انٹرنیٹ سروس معطل ہے،ادویات کی شدید قلت اور اجناس کا فقدان ہے۔بھارت نے مقبوضہ وادی کو فوجی چھا ؤنی میں تبدیل کردیا، کشمیریوں کی جانب سے متوقع احتجاج کے پیش نظر بھارتی فوج کی اضافی نفری تعینات ہے،،،سرد موسم نے کشمیریوں کی مشکلات میں اضافہ کر دیا،حریت قیادت کی جانب سے مسلسل لاک ڈاؤن کے باوجود مظاہرے اور ریلیاں نکالی جا رہی ہیںخو د کو جمہوریت کا چیمپئن کہلوانے والا بھارت حق آزادی دینے سے انکاری اور کشمیریوں کی نسل کشی کا ذمہ دار ہے۔ کشمیریوں کو بنیادی انسانی حقوق اور آزادی اظہار رائے سے محروم رکھا ہوا ہے۔صدر آزاد کشمیرمسعودخان نے یوم سیاہ کے موقع پر پیغام دیتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ علاقےمیں یوم جمہوریہ منانے کاحق نہیں رکھتا، بھارت نے مقبوضہ وادی میں کشمیریوں کومحصورکررکھاہے، قابض بھارتی فوج کشمیریوں کی نسل کشی کررہی ہے، عالمی برادری کشمیریوں کوحق خودارادیت دلانےکیلیےکردارادا کرے۔
شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: