ایٹمی معاہدے میں اقوام متحدہ کو ملوث کرنے پر ایران کی دھمکی

0
ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے یورپی ممالک کے رویے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یورپ کوبلا سوچے سمجھے امریکا کی حمایت کرنے کے بجائے ایران کے موقف پر بھی غور کرنا چاہئے اور اگر انہوں نے اپنا نامناسب رویہ نہ بدلا اور ایٹمی ہتھیاروں سے متعلق فائل سلامتی کونسل کو بھجوائی تو ہم این پی ٹی چھوڑ دیں گے۔دوسری جانب ایران کے پارلیمانی سپیکر علی لاریحانی نے بھی خبردار کیا کہ اگر یورپی ممالک نے ایران کے خلاف تنازعات کے حل کیلئے غیرمنصفانہ میکنزم نافذ کیا تو اس کے سنگین نتائج نکل سکتے ہیں جو ناصرف یورپ بلکہ امریکا اور اسرائیل کیلئے خطرناک ثابت ہوں گے۔رواں ماہ 8 جنوری کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایران کو جوہری منصوبے سے دستبردار ہونا پڑے گا، میں جب تک امریکا کا صدر ہوں ایران ایٹمی طاقت نہیں بن سکتا۔ امریکی صدر کا کہنا تھا کہ اوباما دور میں ایران کو پیسے ملے اور اس نے میزائل بناکرہم پرحملہ کیا، ہم اپنےزبردست مہلک ہتھیاراستعمال نہیں کرناچاہتے مگر ایران کو جوہری منصوبے سے دستبردار ہونا پڑے گا۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: