شام پرعائد یورپی یونین کی پابندیوں کیخلاف ورزی کا معاملہ

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق برطانوی وزیرخارجہ ڈومینیک راب نے ایک بیان میں کہا کہ ایران نے ادریان داریا سے متعلق کرائی گئی یقین دہانیوں کی مکمل بے توقیری کی ہےانہوں نے کہا کہ تیل کی سفاک نظام کو فروخت ایرانی حکومت کے روایتی کردار کا حصہ ہے، اس نے یہ علاقائی سلامتی کو تہس نہس کرنے کے لیے وضع اور اختیار کررکھا ہے۔برطانیہ نے کہا کہ وہ ا س ماہ کے آخر میں اس معاملے کو اقوام متحدہ میں اٹھائے گا، نئی سیٹلائٹ تصاویر کے مطابق ایرانی آئل ٹینکر شام کے ساحلی علاقے میں بدستور موجود ہے، اس جہاز پر اکیس لاکھ بیرل خام تیل لدا ہوا ہے اور اس کی مالیت تیرہ کروڑ ڈالر بتائی گئی تھی۔ خیال رہے کہ چار جولائی کو اس آئیل ٹینکر کو جبل الطارق میں برطانیہ کی شاہی بحریہ نے یورپی یونین کی شام پرعائد پابندیوں کی خلاف ورزی کے الزام میں تحویل میں لے لیا تھا، اس کے دو ہفتے کے بعد ایرانی پاسداران انقلاب نے خلیج میں برطانیہ کے ایک پرچم بردار جہاز کو پکڑ لیا تھا اور ابھی تک اس کو نہیں چھوڑا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.