ایران اور امریکا کے درمیان تناؤ بڑھنےلگا

0
ایران کی سپاہ پاسدران انقلاب اسلامی نے جنوبی ایران میں بڑے پیمانے پر فوجی مشقوں کا آغاز کر دیا،،سپاہ پاسدران انقلاب اسلامی کی جانب سے پیامبراعظم 14 کے نام سے منسوب جنگی مشقوں کا انعقاد آبنائے ہرمز کے مغربی حصوں اور جنوبی صوبہ ہرمزگان میں کیا گیا ہے۔ مشقوں میں آئی آر جی سی کی بحریہ اور ایروسپیس فورس کے جہاز، بغیر پائلٹ طیارے، میزائل اور ریڈار یونٹ مشترکہ آپریشن میں شامل ہیں۔جنگی مشقوں کے دوران فرضی دشمن کے بحری رابطوں کو منقطع کرنے کے لئے مائن بچھانے کا عملی مظاہرہ کیا گیا اس کے علاوہ ہیلی کاپٹرزکے ذریعہ ساحل سے سمندر تک مار کرنے والےمیزائلوں کےلانچ کرنےکی بھی مشق کی گئی۔سیٹلائٹ تصاویر کے مطابق ایرانی بحریہ نے اہم آبی تجارتی گزرگاہ آبنائے ہرمز کے نزدیک ایک مصنوعی امریکی طیارہ بردار بحری بیڑے کو نشانہ بنایا۔ اس سے قبل 2015ء میں بھی ایران نے امریکا کے نیمز کلاس طیارہ بردار بحری بیڑے کی نقل تیار کرکے اس کو میزائلوں سے نشانہ بنایا تھا۔دوسری جانب بحرین میں موجود امریکا کے پانچویں بحری بیڑے کی خاتون ترجمان کمانڈر ریبیکا ریبریخ نے کہاکہ پتا نہیں ایران اس طرح کی جعلی مشقوں سے کیا حاصل کرنا چاہتا ہے لیکن وہ جان لے کہ امریکی بحری افواج بھرپور دفاعی صلاحیت کی حامل ہے اور وہ کسی بھی خطرے نمٹنے کیلئے پوری طرح تیار ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: