ایران کاامریکی پابندیوں سےمتاثرہونےکااعتراف

ایرانی وزیر تیل بیژن زنگنہ نے کہا ہے کہ ایران کے خلاف غیرملکی پابندیوں نےایران کی تیل کی صنعت کو متاثر کیا ہے لیکن تہران حکومت ان پابندیوں کے خلاف اپنی مزاحمت جاری رکھےگی۔ اور تیل کی معیشت کو مزید تقویت دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ایران کے لیے اب حالات یہ ہیں کہ ہر چند سال بعد تیل کی ملکی صنعت کو اقتصادی پابندیوں اور کسی نہ کسی بڑے دھچکے کا سامنا رہتا ہے۔دوسری جانب وزیرخارجہ جواد ظریف بھی واضح کیا کہ امریکی پابندیوں اوردباؤ کے باوجود ایران تیل کی برآمد ہر صورت جاری رکھےگا۔
یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 2018 میں ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے تجارتی اورمعاشی پابندیاں عائد کردی تھیں جبکہ معاہدے کے دیگرعالمی فریقین برطانیہ،جرمنی،فرانس، روس اور چین نے ایران سےمعاہدہ جاری رکھنے کا اعلان کیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.