آزاد کشمیرپربھارتی حملےکوخارج ازامکان نہیں قراردیاجاسکتا،صدرسردارمسعود

0

ترکی کی انادولو نیوزایجنسی کوانٹرویودیتےہوئےصدرآزاد کشمیرسردارمسعود خان کا کہنا تھا کہ انڈین وزیراعظم نریندر مودی آزاد کشمیرپرحملے کی دھمکیاں دے رہے ہیں اوریہی بات بھارتی وزیر دفاع بھی کہہ رہے ہیں ،ابھی کچھ دن پہلےبھارتی فوج اوراس کی خفیہ ایجنسی کےسربراہ اوروزیراعظم مودی کےقومی سلامتی کے مشیرآپس میں ملے ہیں اورپاکستان کےخلاف کوئی خفیہ منصوبہ بنایا ہےلیکن ہم بھارت کی طرف سےکسی بھی چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہیں۔صدرآزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ بھارتی رہنماﺅں کی آزاد کشمیر پرحملے کی دھمکی کی گونج کے ساتھ ساتھ ہم دیکھ رہے ہیں کہ بھارت کی 9 لاکھ فوج مقبوضہ کشمیرمیں نوجوانوں کے قتل عام میں مصروف ہے۔قابض فوج نے لائن آف کنٹرول پرجنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ بڑھا دیا ہےاوراب پاکستان کے ساتھ جنگ کا ماحول بنانے کے لیے جھوٹےالزامات کی مہم چلانےکا آغاز بھی کردیا ہے۔سردارمسعود کامزید کہنا تھاکہ بھارت کےرہنما جھوٹےالزامات لگا رہےہیں کہ پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج سے لڑنے کے لیےایک نئی عسکری تنظیم تشکیل دےدی ہے،صدرسردار مسعود خان نےکہا کہ مجھےکسی نےسوال پوچھا ہےکہ کیا مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں جان کی بازی ہارنے والے ریاض نائیکو کوآپ حریت پسند سمجھتےہیں یا دہشتگرد ؟میں نےجواب دیا کہ مقبوضہ ریاست میں اس سوال پر رائےشماری کرا کردیکھ لیں توسوال پوچھنے والےنےکہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں ایسا کوئی ریفرنڈم نہیں ہوسکتا تومیں نے اُسے بتایا کہ یہ ریفرنڈم کشمیریوں کےدلوں اوردماغوں میں موجود ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: