عالمی عدالت کا میانمار کو مسلم نسل کشی روکنے کا حکم

0
ہالینڈ کے شہر دی ہیگ میں قائم عالمی عدالت انصاف کے ہیڈ کوارٹرز میں میانمار پر روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کے الزامات کے مقدمے کی سماعت ہوئی۔یہ مقدمہ مغربی افریقہ کے مسلم ملک گیمبیا کی درخواست پر شروع کیا گیا تھا۔عالمی عدالت انصاف کے 17 رکنی بینچ نے اپنے متفقہ فیصلے میں مدعی ملک گیمبیا کو مقدمے کی کارروائی مزید آگے بڑھانے کی اجازت دینے کا حکم بھی جاری کیا۔عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہےکہ 1948 کے نسل کشی سے متعلق کنونشن کی دفعات کے تحت میانمار روہنگیا مسلمانوں کے ناقابل تلافی نقصان کا باعث بنا ہے۔ عالمی عدالت کی جانب سے میانمار کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ نسل کشی کی روک تھام سے متعلق اپنی ذمہ داریاں پوری کرے اور ایسے اقدامات کرے جس سے کسی مخصوص نسل یا گروہ کے افراد قتل نہ ہوں اور انہیں کسی قسم کا نقصان نہ پہنچے۔میانمار میں 2017 میں حکومتی سرپرستی میں فوج نے راخائن ریاست میں روہنگیا مسلمانوں پر مظالم ڈھائے اور اس دوران متعدد گھروں سمیت پورے پورے گاؤں کو آگ لگادی گئی جس کے نتیجے میں متعدد افراد جان سے گئےاورلاکھوں روہنگیا مسلمانوں کو بنگلادیش کی طرف ہجرت کرنا پڑی۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: