فریال تالپور 500 ایکڑ زرعی زمین اور لندن میں 5 فلیٹس کی مالکن

آصف زرداری کے امریکا میں فلیٹس کے بعد ان کی بہن فریال تالپور کی اندرون سندھ 500 ایکڑ زرعی زمین اور دبئی میں 5 فلیٹس سامنے آگئے ۔جے آئی ٹی رپورٹ کے مطابق مذکورہ زرعی اراضی نواب شاہ اور لاڑکانی میں موجود ہے مگر فریال تالپور نے اس کو الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے اثاثوں میں ظاہر نہیں کیا۔
دوسری جانب دبئی میں اربوں روپے مالیت کے 5 لگثری فلیٹ بھی فریال تالپور کی ملکیت نکل آئے ہیں جو ان کے اپنے نام پر نہیں بلکہ تین فلیٹس ڈرائیور حامد کے نام جبکہ دو فرنٹ مین غلام عباس کے نام رجسٹرڈ ہیں۔جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ فریال تالپور فلیٹس کی بینیفشل مالک ہیں جس کے تحت ان کو ان فلیٹس کی خرید و فروخت کا مکمل اختیار حاصل ہے۔
رپورٹ کے مطابق دبئی میں اور اندرون سندھ تمام جائیداد کِک بیکس اور منی لانڈنگ سے بنائی گئی اور دبئی فلیٹس کے لیے تمام رقم حوالہ اور ہنڈی کے ذریعے منتقل کی گئی۔جے آئی ٹی نے فریال تالپور کی دبئی میں موجود جائیداد منجمد کرنے کی درخواست کردی ہے۔ قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ جائیداد چھپانے کی وجہ سے فریال تالپور کی قومی اسمبلی کی رکنیت معطل ہوسکتی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.