فرانسیسی صدر کا بدنام زمانہ میگزین کی مذمت سے انکار

0
بیروت میں دورے کے د وران ایک صحافی کے سوال پر فرانسیسی صدر نے کہاہمارے ملک میں اظہار رائے کی آزادی ہے۔یہ میگزین سے متعلق رائے دینے کیلئے مناسب جگہ نہیں،یہ فرانسیسی شہریوں پر منحصر ہے کہ وہ ایک دوسرے کا احترام کریں اور نفرت سے بچیں۔
انہوں نے کہا یہ وہ جگہ نہیں ہے کہ میں بطور صدر کسی صحافی یا نیوز روم کے ادارتی انتخاب پر فیصلہ صادر کروں،ہمارے پاس آزادی صحافت ہے۔انہوں نے کہا فرانس میں توہین کی آزادی ہے جو ضمیر کی آزادی سے منسلک ہے ۔میں ان تمام آزادیوں کے تحفظ کیلئے یہاں آیاہوں ۔ فرانس میں کسی صدر،گورنر،توہین مذہب پر تنقید کی جا سکتی ہے ۔گزشتہ روزپاکستان کی جانب سے فرانسیسی میگزین کی گستاخانہ خاکے دوبارہ شائع کرنےکے فیصلے کی شدید مذمت کی گئی تھی،،ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھاایسے سوچے سمجھے عمل کا مقصد اربوں مسلمانوں کے جذبات مجرو ح کرنا ہے،،اس عمل کو اظہار رائے کی آزادی کا جواز نہیں دیا جا سکتا،دنیا میں امن،بین ا لا مذاہب ہم آ ہنگی کو نقصان پہنچتا ہے

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: