ایف بی آر کا بے نامی کمپنیوں کیخلاف بھی کریک ڈاؤن کا فیصلہ

فیڈرل بورڈ آف ریو نیو نے بے نامی کمپنیوں کے خلاف بھی کریک ڈان کا فیصلہ کرتے ہوئے سکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان سے تفصیلات طلب کرلی ہیں۔ ایف بی آر کی جانب سے 33 بے نامی کمپنیوں کی تفصیلات سکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان سے طلب کی گئیں ہیں۔ایف بی آر نے ایس ای سی پی سے بے نامی کمپنیوں کے مالکان کے نام، شناختی کارڈ نمبر و دیگر تفصیلات طلب کی ہیں۔رواں مالی سال کے فنانس بل کی منظوری کے بعد ایف بی آر کو گھروں پر چھاپے مارنے کا اختیار مل جائے گا۔ فنانس بل کے مطابق انکم ٹیکس کمشنر غیر ظاہر شدہ سونے اورغیر ملکی کرنسی کی برآمدگی کے لیے چھاپے مارسکیں گے اور چھاپوں میں برآمد شدہ سونا اورغیرملکی کرنسی ضبط کرلی جائے گی۔ ایف بی آر پہلے ہی بے نامی جائیداد اور بے نامی لگژری گاڑیاں رکھنے والوں کے خلاف کارروائی کا آغاز بھی کر چکا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.