چین نےکرونا کی خلاف ویکسین تیارکی توپوری دنیا کیلئےہوگی،شی جن پنگ

0

اے ایف پی کےمطابق چینی صدرشی جن پنگ نےعالمی ادارہ صحت کی ہیلتھ اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تحقیق اور تیاری کے بعد چین کی ویکسین استعمال میں آتی ہے تو یہ پوری دنیا کے لیے ہوگی۔ اس اقدام کا مقصد ترقی پذیر ممالک کے لیے سستی اور قابل رسائی ویکسین کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔چینی صدر کا مزید کہنا تھا کہ وبا کےخلاف عالمی کوششوں میں تعاون کے لیے دو سال کے عرصے میں دو ارب ڈالر کی امداد دینگے ۔چینی صدرنےمزید کہا کہ چین نےکرونا وائرس کے حوالے سےبروقت معلومات کا تبادلہ کیا اور اس حوالے سے اس کا رویہ ہیشہ ذمہ دارانہ اورشفاف رہا ہے،چین کرونا وائرس کے حوالے سے عالمی تحقیقات کی حمایت کرتا ہے تاہم اسے قبل اس وبا پر قابو پانا ضروری ہے۔وبا کےخلاف ردِعمل کی انکوائری میں ممالک کے تجربات اور خامیوں پرقابو پانے کی سفارشات کو بھی شامل کیاجائےورلڈ ہیلتھ اسمبلی سے خطاب میں عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹرجنرل ٹیڈروس نےعزم کا اعادہ کیا کہ کرونا وائرس کی وبا کے حوالے سےایک غیرجانبدارانہ انکوائری کرائی جائےگی۔جس میں اس سےحاصل ہونے والے سبق اور تجربے کا جائزہ لیا جائےگا۔ اس کےعلاوہ اس پرعالمی ردِعمل پرغورکیا جائےگااورمستقبل میں اس طرح کے حالات کی تیاری کے لیےاقدامات بھی تجویزکیےجائیں گے۔

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: