دنیا بھر میں عید کی دلچسپ و منفرد روایات

0
پاکستان میں عید کے موقع پر لوگ صبح ہی نئے کپڑے پہن کر نماز عید کے لیے تیار ہوتے ہیں اور غریب افراد کی مدد کے لیے نماز سے قبل صدقۂ فطر کی ادائیگی کرتے ہیں، بڑوں کی جانب سےبچوں کو پیسوں کی شکل میں عیدی کا تحفہ دیا جاتا ہے، ٹی وی چینلز پر عید کی مناسبت سے خصوصی پروگرامز تیار کئے جاتے ہیں تاہم سوشل میڈیا اور موبائل فونز کی وجہ سے عید کارڈز کی روایت دم توڑ چکی ہے
سعودی عرب میں عید پر گھروں کو سجایا جاتا ہے۔ سعودی شہری طرح طرح کے پکوان بنا کر رشتے داروں اور دوستوں کی تواضع کرتے ہیں نمازِ عید کے بعد سب خاندان آبائی گھروں میں جمع ہوتے ہیں۔ بچوں کو تحفوں سے بھرے بیگ دیئے جاتے ہیں جبکہ غریبوں کے گھرکے ہاہراجناس سے بھرے کے تھیلے رکھے جاتے ہیں
تیونس میں عید الفطر پردوستوں اور عزیزوں کی تواضع کے لیے خاص کوکیز بنائے جاتے ہیں جن میں روایتی مٹھائی اور کئی طرح کے کیک بھی شامل ہوتے ہیں۔ عید کے دن رقص و موسیقی کی محافل سجائی جاتی ہیں جب کہ تحفے تحائف دینے کا سلسلہ بھی جاری رہتا ہے۔ شام کے وقت عید کی مناسبت سے خاص طور پر تیار کیے گئے پکوان دستر خوان کی زینت بنتے ہیں۔
بنگلہ دیش میں بھی دیگر مسلمان ممالک کی طرح دن کا آغاز نماز سے ہوتا ہے اور اس کے بعد رشتہ داروں سے ملاقاتیں ہوتی ہیں۔ عید کے موقع پر زکوٰة اور فطرانہ بھی دیا جاتا ہے۔ عید پر نئے لباس پہنے جاتے ہیں جبکہ گھروں میں خصوصی دعوتوں کا اہتمام ہوتا ہے اور خواتین اپنا ایک ہاتھ مہندی سے سجاتی ہیں۔
عیدالفطر افغانستان کے مسلمانوں کے لیے خصوصی اہمیت کا حامل دن ہے ۔ پشتو بولنے والی برادری عید کو ‘کوچنائی اختر’ پکارتے ہیں جبکہ اس پرمسرت موقع پر مہمانوں کی تواضع کے لیے جلیبیاں اور کیک تیار کیا جاتا ہے جسے ‘واکلچہ’ کہا جاتاہے۔ملائیشیا میں عید کا مقامی نام ہاری ریا عیدالفطری ہے جس کا مطلب ہے کہ منانے والا دن، ملائیشیا میں عید کے دن لوگ خصوصی لباس زیب تن کرتے ہیں اور گھروں کے دروازے ہمیشہ کھلے رکھے جاتے ہیں جبکہ عید پر روایتی آتشبازی کا مظاہرہ بھی کیا جاتا ہے اس روز بچوں کو عیدی دی جاتی ہے جیسے ‘دوت رایا’ کہا جاتا ہے۔
مصرمیں ٓعید کےپہلے روز خاندان والوں کیلئے دعوتوں کا اہتمام کیا جاتا ہےجبکہ دوسرے اور تیسرے دن سینما گھروں، تھیٹروں اور پبلک پارکس کے علاوہ ساحلی علاقوں میں ہلا گلا کیا جاتا ہے۔ بچوں کو عام طور پر نئے کپڑوں کا تحفہ دیا جاتا ہے جبکہ خواتین اور عورتوں کے لیے بھی خصوصی تحائف کا اہتمام کیا جاتا ہے۔
انڈونیشیا میں اس عید کو عیدالفطری او لیباران بھی کہا جاتا ہے ،عید سے قبل رات کو ‘تیکرائن’ کہا جاتا ہے۔ اس رات لوگوں کے ماشاءاللہ کہنے سے ماحول گونج اٹھتا ہے، جبکہ گلیوں بازاروں میں نعرۂ تکبیر بھی لگائے جاتے ہیں۔اس موقع پر دیئے بھی جلائے جاتے ہیں اسی طرح گھروں کے دروازوں اور دو بچوں میں موم بتیاں، لال ٹینیں اور دیئے جلا کر رکھے جاتے ہیں ۔
ترکی میں عید پر بزرگوں کے دائیں ہاتھ کو بوسہ دے کر ان کی تکریم کی جاتی ہے۔ بچے اپنے رشتہ داروں کے ہاں جاتے ہیں اور عید کی مبارکباد دیتے ہیں۔ جہاں انہیں تحائف ملتے ہیں۔ عید کے موقع پر ترک لوگ بکلاوا نامی مٹھائی تقسیم کرتے ہیں، اس کے علاوہ چاکلیٹس اور رقم بھی تحائف کی صورت تقسیم کی جاتی ہیں۔
نائیجیریا میں عید کو ‘چھوٹی صلوٰة’ کانام دیا جاتا ہے اور لوگ مل کر اس دن کو مناتے ہیں، اس موقع پر ملک بھر میں تین روزہ تعطیل ہوتی ہے اور تمام سرکار و نجی محکمے اور تعلیمی ادارے بند رہتے ہیں
عید الفطر صومالیہ کے مسلمان روایتی جوش و خروش سے مناتے ہیں، اس موقع پر ضیافتوں کے ذریعے پیاروں کو اکھٹا کیا جاتا ہے اور خصوصی پکوان جیسے حلوہ پیش کیا جاتا ہے۔
عوامی جمہوریہ چین کے سرکاری طور پر تسلیم کیے گئے 56 نسلی گروہوں میں سے 10 عید الفطر مناتے ہیں۔ جن کی اکثریت مسلمان ہے۔ عید کے روز مسلم اکثریتی علاقوں میں سرکاری چھٹی ہوتی ہے ۔
میانمار کے مسلمان صرف ایک دن کی عید مناتے ہیں جو اسے عید نئی ، عید کا لے یا شائی مائی عید کہتے ہیں۔ اگرچہ برما میں عید کے موقع پر قومی تعطیل نہیں ہوتی تاہم مالکان کی جانب سے مسلمان ملازمین کو خصوصی چھٹی دی جاتی ہے تاہم یہاں کوئی رویت ہلال کمیٹی نہ ہونے کی وجہ سے مختلف مقامات پر الگ الگ اوقات میں عید منائی جاتی ہے۔
اگرچہ برطانیہ میں عیدالفطر قومی تعطیل کا دن نہیں مگر یہاں بیشتر مسلمان صبح نماز ادا کرتے ہیں اس موقع پر مقامی دفاتر اور سکولوں میں مسلم برادری کو حاضری سے استثنیٰ دیا جاتا ہے۔ عید کے موقع پر مسلم اپنے رشتے داروں اور دوستوں سے میل ملاقات کر کے عید کی مبارکباد دیتے ہیں جبکہ اپنے پیاروں میں روایتی پکوان اور مٹھائیاں بھی تقسیم کئے جاتے ہیں۔
امریکہ میں مسلمان عید کی نماز کی ادائیگی کے لیے اسلامک سینٹرز میں اکٹھے ہوتے ہیں اور اس موقع پر پارک میں بھی نماز کی ادائیگی ہوتی ہے۔ مخیر حضرات بڑی بڑی پارٹیوں کا بھی اہتمام کرتے ہیں۔ بڑے بچوں کو عیدی دیتے ہیں جبکہ خاندان آپس میں تحائف کا تبادلہ بھی کرتے ہیں۔
آسٹریلیا اگرچہ غیر مسلم ملک ہے مگر یہاں کے مسلمان مکمل آزادی کے ساتھ عید کا تہوار مناتے ہیں اور انہیں عید الفطر کے موقع پر ایک دن کی خصوصی چھٹی بھی دی جاتی ہے۔ بڑی تعداد میں مسلمان مساجد میں جمع ہو کر عید کی نماز ادا کرتے ہیں

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: