کینیڈین وزیراعظم ماحولیاتی آلودگی کوکم کرنے کیلئےمتحرک

کینیڈاماحولیاتی آلودگی سےپریشان،،بڑاقدم اٹھالیا،،وزیراعظم جسٹن ٹروڈوکی حکومت نے ایک مرتبہ استعمال ہونے والی پلاسٹک اشیا پر پابندی لگانے کا فیصلہ کرلیا،اپنےایک بیان میں وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے کہا 2021 سے قبل ساحلی بندرگاہوں پر ایک مرتبہ استعمال ہونے والی نقصان دہ پلاسٹک پر پابندی عائد کردی جائے گی۔ان کا کہنا تھا سائنسی بنیادوں پر جائزے کی بنیاد پر مخصوص اشیا پر پابندی کا فیصلہ کیا جائے گا، لیکن حکومت پانی کی بوتلوں، پلاسٹک کی تھیلیوں اور اسٹراز پر پابندی لگانے پرغور کر رہی ہے۔کینیڈین وزیراعظم نے کہا ہم نے یورپی یونین کی پارلیمنٹ سے متاثر ہو کر یہ فیصلہ کیا ،جس نے آلودگی کے خلاف ایسااقدام کیاتھا۔جسٹن ٹروڈو کا کہنا تھا کہ اکثر ممالک ایسا کررہے ہیں اور کینیڈا بھی ان میں سے ایک ہوگا۔ کینیڈا میں استعمال ہونے والے پلاسٹک کا 10 فیصد سے بھی کم حصہ ری سائیکلنگ کے ذریعے دوبارہ استعمال کیا جاتا ہے،دنیا بھر میں ہر سال تقریبا 10 لاکھ پرندے اور ایک لاکھ سمندری جانور پلاسٹک کھانے یا اپنے گرد لپٹنے کی وجہ سے زخمی ہوتےہیں یا مر جاتے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.