انتہا پسند مودی کے دیس میں کوئی محفوظ نہیں

کیجریوال کا کہنا ہے کہ ’’میرے آس پاس جو پولیس نظر آتی ہے، سب حکمراں جماعت کو رپورٹ دیتی ہے، میرا پرسنل سیکورٹی آفیسر تک بی جے پی کو رپورٹ کرتا ہے،،،مودی سرکار مجھے میرے پرسنل سیکورٹی آفیسر سے ہی قتل کراسکتی ہےجیسے اندرا گاندھی کو قتل کرایا گیا تھا۔
دوسری جانب عام آدمی پارٹی کے ترجمان سورب بھردواج نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ بننے سے اب تک کیجریوال پر کم از کم چھ مرتبہ پولیس کی موجودگی میں قاتلانہ حملہ کیا جاچکا ہے اور ان حملوں کے بعد بھی کوئی ایکشن نہیں لیا گیا،ہمیں دہلی پولیس پراعتماد نہیں ۔رواں ماہ کے اوائل میں لوگ سبھا انتخابات کے دوران روڈ شو کے موقع پر ایک شخص نے وزیراعلیٰ کیجریوال کی گاڑی پر چڑھ کر اُنہیں تھپڑ رسید کردیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.